کشمیر پر عمران کی کوئی پالیسی نہیں،معیشت تباہ کردی،بلاول کی حکومت پر تنقید

کشمیر پر عمران کی کوئی پالیسی نہیں،معیشت تباہ کردی،بلاول کی حکومت پر تنقید
کشمیر پر عمران کی کوئی پالیسی نہیں،معیشت تباہ کردی،بلاول کی حکومت پر تنقید

پاکستان پیپلز پارٹی کے چئیرمین بلاول بھٹو زرداری نے کراچی میں کانفرنس کرتے ہوئے وفاق اور حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کے چئیرمین بلاول بھٹو نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ عمران خان جمہوریت اور ملکی معیشت دونوں کے لیئے خطرہ ہے۔بلاول نے اپنی پریس کانفرنس میں کہا کہ کورونا وائرس کی صورتحال میں وفاق کی کوئی پالیسی نہیں وفاق جان کر کورونا ٹیسٹ کی استعدا د نہیں بڑھا رہا

کشمیر کی پالیسی سے متعلق بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم کہتے تھے کہ مودی الیکشن جیت گیا تو کشمیر کا مسئلہ حل ہوجائے گا۔بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ موجودہ حکومت کی ناکام پالیسی سے آج کشمیر تنہا ہوچکا ہے۔

اپنی صوبائی حکومت کی کارکردگی کا دعویٰ کرتے ہوئے چئیرمین پیپلز پارٹی کا کہنا تھا کہ سندھ عوامی بجٹ پیش کرتے ہوئے کم وسائل کے باوجود ڈاکٹرز اور نرسرز کو ریلیف دیا۔ ٹڈل دل کی وجہ سے کسان بہت متاثر ہو رہے ہیں۔ سندھ حکومت ان کی مدد کرتے ہوئے انھیں سبسڈی دے گی۔ اربن سینٹر میں بھی چھوٹے کاروبار کرنے والوں کو قرض دیں گے اور وبا کے متاثرین کی فیملی کو گرانٹ دلوائیں گے۔

احتساب کے نظام پر بات کرتے ہوئے چئیرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ ان کا کہنا اگر احتساب کا نظام موجود ہے تو سب کے لیے ایک جیسا ہونا چاہیے۔ نیب وفاقی کرپشن کو سہولت دے رہی ہے جبکہ سندھ کا وزیراعلیٰ ہر ہفتے اسلام آباد میں پیشی بھگتا ہے۔ یہ دوہرا نظام ہے۔ بی آر ٹی پر سٹے کیوں ہے؟ اگر ملک میں ایک قانون ہے تو بی آرٹی پر سٹے ختم کیا جائے۔

تبصرے