این ڈی ایم اےاتنا پیسہ کیسے خرچ کر رہا ہے؟ کوئی ضابطہ کار بھی ہے؟سپریم کورٹ

این ڈی ایم اےاتنا پیسہ کیسے خرچ کر رہا ہے؟ کوئی ضابطہ کار بھی ہے؟سپریم کورٹ
این ڈی ایم اےاتنا پیسہ کیسے خرچ کر رہا ہے؟ کوئی ضابطہ کار بھی ہے؟سپریم کورٹ

کورونا از خود نوٹس کی سماعت ہوئی ہے جس میں سپریم کورٹ آ ف پاکستان نے ریمارکس دیئے ہیں کہ لگتا ہے کہ این ڈی ایم اے کو ختم کرنا پڑیگا

اردو ٹرینڈز میں سپریم کورٹ میں کورونا از خود نوٹس کیس کی سماعت ہوئی۔سماعت میں چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ این ڈی ایم کو متعدد بار حکم دیا کہ مشینری کی در آمد سے متعلق دستاویزات جمع کرائے مگر عدالتی حکم کو نہیں مانا گیا۔

ججز نے ریمارکس دیئے کہ این ڈی ایم نے کام نہیں کرنا کیا وزیر اعظم پاکستان کو این ڈی ایم ختم کرنے کا کہ دیں؟سپریم کورٹ میں کورونا وائرس از خود نوٹس کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے کہا کہ الحفیظ کمپنی کس کی ہے ابھی تک یہ بھی نہیں بتایا گیا۔نمائندہ ڈیزاسٹر مینجمنٹ نے عدالت کو آگاہ کیا کہ الحفیظ کمپنی کی مشینری این ڈی ایم اے نے امپورٹ نہیں کی۔معزز جج نے ریمارکس دیے کہ این ڈی ایم اے نے مشینری درآمد نہیں کی مگر سہولت کاری کا تو کام کیا۔ ابھی تک الحفیظ کمپنی کا مالک سامنے نہیں آسکا۔

چیف جسٹس گلزاراحمد کا کہنا تھا کہ اصل مسئلہ کسٹم اور دیگر قوانین پر عمل نہ ہونا ہے۔ معزز جج کا کہنا تھا کہ چارٹرڈ طیارے کے لیے ایک کروڑ7 لاکھ سے زائد نقد رقم ادا کی گئی۔ چارٹرڈ معاہدے کے مطابق ادائیگی کیسے کر سکتے ہیں؟چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ شاید بہت کچھ غلط ہوا ہے جس پر پردہ ڈالنے کی کوشش کی جار ہی ہے، عدالت کسی کو ایک روپے کا بھی فائدہ نہیں پہنچنے دے گے۔ ملک کے اداروں کو شفاف انداز میں چلنا چاہیے۔ صرف زبانی نہیں دستاویز سے شفافیت دکھانا پڑے گی۔

تبصرے