جعلی لائسنس دینے کا معاملہ،سپریم کورٹ نے فوجداری مقدمات درج کرنے کا حکم دیدیا

جعلی لائسنس دینے کا معاملہ،سپریم کورٹ نے فوجداری مقدمات درج کرنے کا حکم دیدیا
جعلی لائسنس دینے کا معاملہ،سپریم کورٹ نے فوجداری مقدمات درج کرنے کا حکم دیدیا

سپریم کورٹ آف پاکستان نے پائلٹس کو جعلی لائسنس جاری کرنے کے معاملے پر افسران کیخلاف فوجداری مقدمات درج کرنے کا حکم دے دیا ہے۔


اردو ٹرینڈز کے مطابق عدالت نے جعلی پائلٹس کے معاملے پر سماعت کی۔ سول ایویشن اور پی آئی اے نے اپنی رپورٹ عدالت میں جمع کرائی جس پر عدالت نے عدم اطمینان کا اظہار کیا۔۔ چیف جسٹس گلزار احمد نے ریمارکس دیئے کہ سول ایوی ایشن کے کمپیوٹر محفوظ نہیں ہیں۔ بھیانک جرم کرنے اور کرانے والے آرام سے تنخواہیں لے رہے ہیں۔
ڈی جی سول ایوی ایشن نے کہا سول ایوی ایشن میں اصلاحات لا رہے ہیں۔ چیف جسٹس نے کہا سول ایوی ایشن چلانا آپ کے بس کی بات نہیں۔چیف جسٹس گلزار احمد نے کہا ایک وقت تھا ہالی ووڈ اداکار پی آئی اے میں سفر کرنا اعزاز سمجھتے تھے، آج حالت دیکھیں پی آئی اے کہاں کھڑا ہے۔
تاہم عدالت نے 2 ہفتے میں کارروائی پر مبنی رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیکر سماعت ملتوی کردی ہے

تبصرے