ادویات میں اضافہ،شیری رحمان نے سینیٹ میں توجہ دلاؤ نوٹس پیش کردیا

ادویات میں اضافہ،شیری رحمان نے سینیٹ میں توجہ دلاؤ نوٹس پیش کردیا
ادویات میں اضافہ،شیری رحمان نے سینیٹ میں توجہ دلاؤ نوٹس پیش کردیا

پاکستان پیپلز پارٹی کی رہنماء اورسینیٹر شیری رحمان نے ادویات کی قیمتوں میں اضافے پر توجہ دلاؤ نوٹس سینیٹ میں دیدیا ہے۔

سینیٹر شیری رحمان نے ملک میں بڑھتی ادویات کی قیمتوں میں اضافے سے متعلق سینیٹ اجلاس میں توجہ دلاؤ نوٹس پیش کیا۔نوٹس میں کہا گیا ہے کہ ڈریپ نے لائیف سیونگ ادویات 7 فیصد اور دیگر کی 10% فیصد قیمتیں بڑھائی۔ 2019 میں حکومت نے 45 ہزار ادویات کی قیمتوں   میں 15 فیصد اضافہ کیا تھا۔

نوٹس میں کہاگیا ہے کہ کورونا وباء کے دوران ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کیا گیا۔بغیر کسی شفافیت کے پی ایم ڈی کو بھی غیر فعال کردیا گیا۔شیری رحمان نے سینیٹ اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ جس طرح ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کیا گیا اس پر سوال اٹھتے ہیں۔پاکستان کے غریب عوام کہاں جائے گے؟ پیپلزپارٹی رہنماء نے کہا کہ حکومت نے ریلیف کی بجائے پاکستان کی عوام کو مہنگائی کے دلدل میں دھکیل دیا ہے

تبصرے