عدالت کا آئی جی اسلام آباد کو مطیع اللہ جان کے اغوا سے متعلق رپورٹ جمع کرنے کا حکم

عدالت کا آئی جی اسلام آباد کو مطیع اللہ جان کے اغوا سے متعلق پورٹ جمع کرنے کا حکم
عدالت کا آئی جی اسلام آباد کو مطیع اللہ جان کے اغوا سے متعلق پورٹ جمع کرنے کا حکم

 سپریم کورٹ نے انسپکٹر جنرل پولیس اسلام آباد کو حکم دیا ہے کہ وہ سینئر صحافی مطیع اللہ جان کے مبینہ اغوا سے متعلق  رپورٹ جمع کرائیں۔

عدالت نے صحافی مطیع اللہ جان توہین عدالت از خود نوٹس کیس کی 22 جولائی کی سماعت کا تحریری حکمنامہ جاری کر دیا۔تحریری حکمنامہ میں کہا گیا ہے کہ  مطیع اللہ جان کے مبینہ اغوا کا مقدمہ بھائی کی مدعیت میں درج ہوچکا ہے۔ مطیع اللہ جان کے بھائی نے تحریری بیان دیا ہے۔ بتایا گیا کہ مطیع اللہ جان 21 جولائی رات 11 بجے فتح جھنگ سے ملے۔

عدالتی حکمنامہ میں کہا گیا ہے کہ مطیع اللہ جان کے بیان دینے کے بعد چالان کی کاپی عدالت پیش کی جائے۔ مطیع اللہ جان کے مبینہ اغوا سے متعلق آئی جی اسلام آباد رپورٹ جمع کرائیں۔ مطیع اللہ جان نے توہین عدالت نوٹس اور جواب جمع کرانے کےلیے وقت مانگا ہے

خیال رہے کہ 21 جولائی کو اسلام کے سیکٹر جی سکس نے اغوا ہونے والے سینئر صحافی مطیع اللہ جان اسی رات کو  فتح جنگ  کے قریب سے بازیاب ہوگئے تھے۔

تبصرے