لا پتہ افراد کیس، سیکرٹری داخلہ کو عدالت آکر بتانا چاہیے تھا، اسلام آباد ہائیکورٹ

لا پتہ افراد کیس، سیکرٹری داخلہ کو عدالت آکر بتانا چاہیے تھا، اسلام آباد ہائیکورٹ
لا پتہ افراد کیس، سیکرٹری داخلہ کو عدالت آکر بتانا چاہیے تھا، اسلام آباد ہائیکورٹ

اسلام آباد ہائی کورٹ نے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں لاپتہ افراد اور جرائم کے بڑھتے واقعات پر وزیراعظم کے مشیر داخلہ مرزا شہزاد اکبر، سیکرٹری داخلہ، چیف کمشنر اور آئی جی اسلام آباد کو 21 ستمبر کو طلب کرلیا۔

چیف جسٹس اطہر من اللّٰہ نے ریمارکس دیے کہ سیکرٹری داخلہ کو خود عدالت آکر بتانا تو چاہئے تھا ہوا کیا تھا؟ وزیراعظم کو کریڈٹ جاتا ہے کہ انہوں نے معاملے کا نوٹس لیا۔

چیف جسٹس اطہر من اللّٰہ نے ایس ای سی پی کے لاپتہ افسر ساجد گوندل کی بازیابی سے متعلق کیس پر سماعت کی۔ ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے بتایا وفاقی کابینہ نے عدالتی حکم کے دوسرے دن ہی معاملے کا نوٹس لے لیا تھا، ساجد گوندل بازیاب ہو کر واپس آچکے ہیں۔

تبصرے