سانحہ اے پی سی،سیکیورٹی کی ناکامی کے باعث یہ سب ہوگیا

سانحہ اے پی سی،سیکیورٹی کی ناکامی کے باعث یہ سب ہوگیا
سانحہ اے پی سی،سیکیورٹی کی ناکامی کے باعث یہ سب ہوگیا

جوڈیشل انکوائری کمیشن نے سانحہ اے پی ایس کو سکیورٹی کی ناکامی قرار دے دیا ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ دھماکوں اور شدید فائرنگ میں سکیورٹی گارڈز جمود کا شکار تھے، دہشتگرد سکول کے عقب سے بغیر کسی مزاحمت داخل ہوئے، سکیورٹی گارڈز نے مزاحمت کی ہوتی تو شاید جانی نقصان اتنا نہ ہوتا۔

جوڈیشل انکوائری کمیشن کی رپورٹ میں مزید کہا گیا غداری سے سکیورٹی پر سمجھوتہ ہوا اور دہشتگردوں کا منصوبہ کامیاب ہوا ہے۔ عدالت نے کہا کہ اپنا ہی خون غداری کر جائے تو نتائج بہت سنگین ہوتے ہیں، کوئی ایجنسی ایسے حملوں کا تدارک نہیں کر سکتی بالخصوص جب دشمن اندر سے ہو، سانحہ اے پی ایس نے فوج کی کامیابیوں کو پس پشت ڈالا۔

اس سے قبل سپریم کورٹ کی جانب سے سانحہ آرمی پبلک سکول کی رپورٹ پبلک کرنے کا حکم دیا گیا تھا۔ عدالت نے ذمہ داروں کے خلاف سخت کارروائی کی بھی ہدایت کی۔

تبصرے