جنسی زیادتی میں ملوث افراد کو سر عام پھانسی کا قانون نہیں ہوگا

جنسی زیادتی میں ملوث افراد کو سر عام پھانسی کا قانون نہیں ہوگا
جنسی زیادتی میں ملوث افراد کو سر عام پھانسی کا قانون نہیں ہوگا

وفاقی وزیر انسانی حقوق شیریں مزاری نے کہا ہےکہ زیادتی کے ملزمان کو عوامی مقامات پر لٹکانے کے بارے میں قانون نہیں لایا جارہا کابینہ میں زیادتی سے متعلق قانون سازی کا فیصلہ ہوگیا ہے۔

شیریں مزاری نے کہا کہ حکومت کی طرف سے عورتوں، بچوں، خواجہ سراؤں پر جنسی تشدد سے متعلق بل جلد آرہا ہے۔انہوں نے کہا کہ ریپ کرنے والے کی سزا کا تعین ابھی نہیں ہوسکا۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ میڈیا سمیت کسی کو بھی متاثرہ فرد کا نام افشا کرنے کی اجازت نہیں ہوگی جو بھی ریپ کا شکار ہونے والے کی شناخت ظاہر کرے گا اسے سخت سزا دی جائےگی۔

تبصرے