حکومت کا اصل دشمن کون؟کیا ملک میں یہ نئی صورتحال ہے؟ پڑھیئے اور جانیئے

حکومت کا اصل دشمن کون؟کیا ملک میں یہ نئی صورتحال ہے؟ پڑھیئے اور جانیئے
حکومت کا اصل دشمن کون؟کیا ملک میں یہ نئی صورتحال ہے؟ پڑھیئے اور جانیئے

ملک میں سیاسی صورتحال کے درجہ حرارت میں تپش بڑھتی جارہی ہے۔کبھی یہاں جلسہ کبھی وہاں جلسہ ،اپوزیشن کر رہی ہے۔کیا اس ملک کو کسی نئی صورتحال کا سامنا ہے؟

قارئین محترم!دنیا میں متعدد بیش بہا انقلاب آئے ۔انقلاب لانے میں نظریات سامنے رہے نظریات کی تکمیل میں اہم کردار ادا کیا اس ملک یا اس خطے میں کساد بازاری نے ۔ملک پاکستان کی گیارہ سیاسی جماعتیں ،اس وقت کے حکومت مخالف الائنس بنا کر جلسے پہ جلسے کر رہی ہیں ۔ان جلسوں کا مقام کبھی پنجاب بنتا ہے کبھی سندھ تو کبھی بلوچستا ن گو کہ یہ سلسلہ جاری ہے کہاں ختم ہوگا؟ نہیں معلوم

مگر سوال یہ ہے کہ کیا حکومت مخالف اس الائنس سے حکومت کو کوئی خطرہ ہے؟اسکا جواب کچھ یوں ہوگا ،اپوزیشن کی اس تحریک سے حکومت گر نہیں سکتی،ختم نہیں ہو سکتی،البتہ!کمزور ہوسکتی ہے۔ایسے ہی جیسے مسلم لیگ ن کی حکومت میں پاکستان تحریک ا نصاف نے جب دھرنا دیا تو انکی حکومت کمزور تو ہوئی مگر ختم نہ ہوئی۔

پھر حکومت اگر گری تو کن وجوہات کی بنا پرگر سکتی ہے؟یہ سوال اہم ہے ۔حکومت کو یہ بات خود بھی واضح معلوم ہے کہ اپوزیشن انکا کچھ نہیں بگاڑ سکتی۔پھر کون حکومت کا کچھ بگاڑ سکتا ہے یا حکومت کے اصل دشمن کون ہیں؟آٹا،چینی،دال ،سبزیاں،انڈے،حکومت کے اصل دشمن ہیں۔

حکومت نے اگر اشیاء کی قیمتوں میں استحکام پیدا نہ کیا تو عوام کا ایک جمع غفیر اس حکومت کو اپنی لپیٹ میں لے گا۔وزیر اعظم کی ترجیح اب بھی نواز شریف کو لانے میں ہے مگر مہنگائی کی روک تھام میں نہیں ۔ترجیحات بدلنا ہوگی ۔عوام کو ریلیف دینا ہوگا ،اگر حکومت کرنی ہے ۔۔!!

تبصرے