تو پھر یہ کمپنی چل جائے گی؟

تو پھر یہ کمپنی چل جائے گی؟
تو پھر یہ کمپنی چل جائے گی؟

یہ کمپنی نہیں چلے گی،کا عنوان سوشل میڈیا پر خوب تبصروں کا مرکز بنا۔یہ نام کہاں سے آیا؟یہ نام پاکستان کے نامور صحافی سہیل وڑائچ کی کتاب کا ٹائٹل تھا جو دیکھتے ہی دیکھتے متنازع بنا اور مقبول بھی ہوا۔اس کتاب کے باہر والے حصے جسے “کور”کہا جاتا ہے دیکھ کر باخوبی اندازہ لگا سکتا ہے کہ اس کتاب میں کون کون سے نکات درج ہیں کن کا ذکر کیا گیا ہوگا۔

سہیل وڑائچ کی صحافتی دنیا میں کیا خدمات ہیں کسی سے چھپی ڈھکی نہیں انکا سوال کرنے کا منفرد انداز انکی پہچان بنا جو آج بھی انکی پہچان ہے۔

اب بات سیدھی۔۔!!

ملک پاکستان کی سیاست اور حالیہ حکومت جو کہ تحریک انصاف کی ہے اس پر تنقید کرتے ہوئے سہیل وڑائچ نے کہا کہ یہ کمپنی نہیں چلے گی۔یقینا انہو ں نے اس کتاب میں حکومت کی ناکامیوں کا ذکر کیا ہوگا جس سے کسی کو انکار نہیں۔

حالیہ دنوں میں ہونے والی سیاست اور لفظی گولہ باری سے جس طرح پاکستان کے تشخص کو مسخ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے ۔کیا ان افراد کی کمپنی چل جائے گی؟برسوں اقتدار کی کرسی پر بیٹھنے والے ملکی سالمیت بھول گئے؟ملک کے راز افشاں نہیں کرتے یہ بھول گئے؟موجود ہ حکومت تو نئی نویلی مانند دلہن ہے۔ کوتاہیاںسرزد ہوں سمجھ آتا ہے کہ کوئی تجربہ نہیں ۔مگر آپ کے پاس تو سب کچھ ہے۔سالہا سال کا تجربہ ہے حکومت کئیں زمانے آپنے کی تو پھر آپ کیسے ملکی سالمیت کے خلاف سر عام بولنے لگ گئے؟

ہونا یہ چاہیئے تھا ایاز صادق کے بیان کے بعد لیگی قیادت آگے آتی اور فورا ان کے اس بیان سے لا تعلق ہوتی اور ایاز صادق سے معافی کا مطالبہ کرتی مگر وہی خاموشی نظر آئی جو ڈیل سے پہلے تھی۔۔!!

آپ کا حق مارا جائے آپ جلسے کرتے ہیں ۔ووٹ کو عزت دو کے نعرے مارتے ہیں ۔آئین کی سربلندی کی بات کرتے ہیں مگر یہ کیا؟آپ نے خود اپنے آئین اور حلف کی خلاف ورزی کرتے ہوئے قومی اسمبلی اجلاس میں کس کے بیانیئے کو بیان کردیا؟
آپ یہ کہتے ہیں کہ عمران خان نا اہل ہیں۔تو آپنے کیا اہل والی بات کی؟آپ نے سمجھ داری کی بات کی؟

اداروں سے تصادم کس کے حق میں ہے؟آپکو اختلا ف ہے یقینا ہوگا اچھی بات ہے آپ کریں اختلاف ۔آپ ہی کے ملک کے ادارے ہیں با ت کریں مگر اداروں سے اختلاف کو آپ وجہ دشمنی بنائیں گے؟افواج پاکستان کو بد نام کریں گے؟

نہیں ایسا نہیں ہوگا،ایسا کیو ں نہیں ہوگا؟کیو نکہ ہر پاکستانی کو اپنے وطن اور اپنی افواج سے محبت ہے۔آپ کو بھی یہ عوام ووٹ دیتی ہے آپ سے بھی محبت کرتی ہے نہ آپ کے حب الوطنی میں کوئی شک مگر ملک کے دشمن کے بیانیئے کو تقویت نہ دیں۔

تبصرے