عمر سے کوئی فرق نہیں پڑتا، حوصلے بلند ہونے چاہئیں انڈیا کی ستر سالہ خاتون نے مثال قائم کردی

عمر سے کوئی فرق نہیں پڑتا، حوصلے بلند ہونے چاہئیں انڈیا کی ستر سالہ خاتون نے مثال قائم کردی
عمر سے کوئی فرق نہیں پڑتا، حوصلے بلند ہونے چاہئیں انڈیا کی ستر سالہ خاتون نے مثال قائم کردی

کبھی کھانا بنانے کی ویڈیو نظر سے گزرے تو لوگ اس سوچ میں مبتلا ہوجاتے ہیں کہ آپ اُس سے بہتر کھانا بنا سکتے ہیں؟بالکل کچھ ایسا ہی ہندوستان سے تعلق رکھنے والی ستر سالہ خاتون سمن دھمانے کے ساتھ ہوا جویوٹیوب پر آجکل چھائی ہوئی ہیں۔

یہ سب اُس وقت سے شروع ہوا جب اُن کے پوتے نے اپنی نانی سے پاؤ بھاجی بنانے کو کہا۔ یوٹیوب پرپاؤ بھا جی کی ویڈیو دیکھتے ہوئے بنانے لگیں اور ویڈیو کی نسبت مزید مزیدار بنا ڈالی۔ سمن کے پوتے نے جب وہ پاؤ بھاجی کھائی تو اپنی نانی کو یوٹیوب چینل بنانے کا مشورہ دیا۔

کچھ دیرکی سوچ بیچار کے بعد سمن اور اُن کے پوتے اِس نتیجے پر پہنچے کہ یوٹیوب پر کھانا بنانے کی ترکیبوں کا چینل بنا نا چاہیے اور اس کے بعد انہوں نے آپلی آجی کے نام سے یوٹیوب چینل بنایا اور لوکی کی سبزی کی پہلی ویڈیو اپلوڈ کی۔پہلی ویڈیو کے بعد سمن نہ رکھی اور ایک کے بعد ایک ویڈیو اپلوڈ کرنا شروع کردیں۔

ان کی ویڈیوز کو بہت سے لوگوں نے پسند کیا اور اُن کے حوصلہ افزائی کی۔ بغیر کسی تعلیم کے سمن نے شروع کے چھ ماہ میں ہی چار ہزار سبسکرائبرز حاصل کرلیے۔ صرف یہی ہی نہیں بلکہ اُن کے یوٹیوب چینل پر 140سے زائد ویڈیوزموجود ہیں اور انہیں یوٹیوب کی جانب سے کریٹر ایورڈ بھی ملا لیکن اُن کا یہ سفر اتنا آسان نہیں تھا۔ ابتدامیں سمن کو تکنیکی خرابیوں اور انٹرنیٹ کے مسائل کا سامنا بھی کرنا پڑا۔ اُن کے پوتے کو بھی ویڈیو ایڈ یٹنگ اور انٹر نیٹ کے مسائل کا اتنا علم نہیں تھا۔

سمن بھی انگریزی کے الفاظ اورکیمرے کے سامنے آنے سے گھبراتی تھیں لیکن انہوں نے ہمت نہیں ہاری اور مسلسل محنت کے بعد کامیابیوں کی منز ل طہ کر لی۔ اب سمن بغیر کسی گھبراہٹ کے ویڈیو بناتی ہیں اور ہر تہوار پر اسپیشل کھانوں کی ترکیبوں کی بھی ویڈیوز اپلوڈ کرتی ہیں۔ سمن کا کہنا ہے کہ ہر وہ عورت جسے کسی کام کی مہا رت حاصل ہے وہ یوٹیوب پر آئے اور نہ صرف اپنی مہارت کو دوسرے لوگوں کو بھی سکھائیں بلکہ اپنے خوابوں کو تکمیل تک پہنچائیں۔

تبصرے