پشاور:جسٹس وقار سیٹھ کورونا کے باعث انتقال کرگئے

پشاور:جسٹس وقار سیٹھ کورونا کے باعث انتقال کرگئے
پشاور:جسٹس وقار سیٹھ کورونا کے باعث انتقال کرگئے

پشاور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس ،جسٹس وقار سیٹھ کورونا کے باعث انتقال کر گئے ہیں ۔وہ کورونا کے باعث کافی دنوں سے بیمار تھے۔

اردو ٹرینڈز کے مطابق پشاور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس ،جسٹس وقار سیٹھ مہلک وائرس کورونا وائرس کے سبب انتقا ل کر گئے ہیں۔جس کی تصدیق پشاور بار ایسوسی ایشن کی جانب سے کرد ی گئی ہے۔

جسٹس وقار سیٹھ کی زندگی پر ایک نظر

جسٹس وقار سیٹھ 16 مارچ 1961 کو ڈی آئی خان میں پیدا ہوئے۔
1977 میں کینٹ پبلک سکول پشاور سے میٹرک اور 1981 میں اسلامیہ کالج پشاور سے بی ایس سی کی ڈگری حاصل کی۔
1985میں خیبر لاء کالج سے ایل ایل بی کی ڈگری حاصل کی جبکہ 1986 میں پشاور یونیورسٹی سے سیاسیات میں ماسٹرز کیا۔
انہوں نے 1985 میں لوئر کورٹس سے اپنی وکالت کا آغاز کیا اور 1990 میں ہائیکورٹ میں اپنی پیشہ وارانہ ذمہ داریاں شروع کیں۔
مئی 2008 میں سپریم کورٹ میں وکالت شروع کی۔ ایڈیشنل جج کی حیثیت سے 2011میں اپنی فرائض کی انجام دہی کا آغاز کیا۔
اس دوران وہ بینکنگ جج، پشاور ہائیکورٹ میں کمپنی جج بھی رہے۔ اس کے ساتھ ساتھ سب آرڈینیٹ جوڈیشری سروس ٹربیونل پشاور کے رکن بھی رہے۔
انہوں نے 28 جون 2018 کو پشاور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس کے حیثیت سے حلف اٹھایا اور اب بھی چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ تعینات تھے۔

تبصرے