حویلیاں طیارہ حادثہ:جان بوجھ کر خراب طیارہ اڑایا گیا،ذمہ کون؟عدالت

حویلیاں طیارہ حادثہ:جان بوجھ کر خراب طیارہ اڑایا گیا،ذمہ کون؟عدالت
حویلیاں طیارہ حادثہ:جان بوجھ کر خراب طیارہ اڑایا گیا،ذمہ کون؟عدالت

سندھ ہائی کورٹ نے حویلیاں طیارہ حادثے کی ذمے داری سے متعلق سول ایوی ایشن اتھارٹی سے تفصیلی جواب مانگ لیا ہے۔

سندھ ہائی کورٹ میں حویلیاں میں پیش آنے والے پی آئی اے کے طیارے کے حادثے کی تحقیقات سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔سماعت کے دوران پی آئی اے اور سول ایوی ایشن کے ٹیکنیکل افسران عدالت میں پیش ہوئے۔دوران سماعت جسٹس محمد علی مظہر نے ریمارکس دیئے کہ اتنا بڑا سانحہ ہوگیا اس کا ذمہ دارکون ہے؟جس پرتکنیکی امور نے کہا کہ تکنیکی مسئلہ آگیا تھا مگر اس واقعے سے سبق بھی حاصل ہوا ہے۔

عدالت نے ریمارکس دئے لوگ پیسے خرچ کریں اور وہ محفوظ بھی نہ ہو تو کیا فائدہ؟ذمہ داروں کا تعین کبھی بھی نہیں کیا جاتا اصلاح نہیں کی جاتی جانتے ہوئے بھی خراب طیار ہ اڑایا گیا۔

دوسری جانب شہید کیپٹن کی والدہ سماعت کے دوران رو پڑیں انہوں نے کہا کہ انکا بیٹا دبائو میں تھا ااسے زبردستی جہاز اڑانے کے لیئے بلایا گیا ۔

تبصرے