فلم انڈسٹری بھی مودی سے تنگ،مودی سرکار نے ٹنڈو نامی فلم کے خلاف ایف آئی آر کاٹ دی ۔

ٹنڈو کے خالق علی عباس ظفر نے منگل کے روز جاری تنازعہ پر ایک بیان جاری کیا اور مذہبی جذبات کو ٹھیس پہنچانے پر معذرت کرلی ۔

اسلام آباد(ویب ڈیسک) تفصیلات کے مطابق منگل کے روز سوشل میڈیا پر شیئر کردہ ایک بیان میں ، ظفر نے لکھا، میں اپنے ملک کے لوگوں کے جذبات کا انتہائی احترام کرتاہو ہم کسی فرد، ذات، برادری، نسل، مذہب کے جذبات کو ٹھیس پہنچانے کا ارادہ نہیں رکھتے تھے ۔ یا مذہبی عقائد یا کسی بھی ادارے، سیاسی جماعت یا شخص، زندہ یا مردہ کی توہین ۔ ڈائریکٹر نے مزید کہا،ٹنڈو کی کاسٹ اور عملے نے اسی سلسلے میں پیدا ہونے والے خدشات کو دور کرنے کے لئے ویب سیریز میں تبدیلیوں کو نافذ کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ ہم اس معاملے میں رہنمائی اور تعاون کے لئے وزارت اطلاعات و نشریات کا شکریہ ادا کرتے ہیں ۔ ہم ایک بار پھر معافی مانگتے ہیں اگر سیریز نے کسی کے جذبات کو ٹھیس پہنچا ہے ۔

اپنے گزشتہ معافی نامے میں ، ایمیزون پرائم شو کے کاسٹ اور عملے نے بتایا، ہم ویب سیریز ٹنڈو کے بارے میں ناظرین کے رد عمل پر کڑی نگاہ رکھے ہوئے ہیں اور آج ایک مباحثے کے دوران، وزارت اطلاعات و نشریات نے ہ میں بڑی تعداد میں شکایات کے بارے میں آگاہ کیا ہے ۔ اور ویب سیریز کے مختلف پہلوؤں پر پٹیشنز موصول ہوئی ہیں جس سے لوگوں کے جذبات کو مجروح کرنے والے مواد کے حوالے سے شدید تشویش اور خدشات ہیں .بیان میں مزید لکھا گیا،ویب سیریز ٹنڈو افسانوں کا کام ہے اور اس کا عمل اور افراد اور واقعات سے کوئی مشابہت محض اتفاق ہے ۔ کاسٹ اور عملے کا کسی فرد، ذات، برادری، نسل کے جذبات کو مجروح کرنے کا کوئی ارادہ نہیں تھا ۔ ہندوستان کی حکمراں ہندو قوم پرست جماعت کے ایک مقامی عہدیدار نے اتوار کے روز ایک ایمیزون پرائم ویب سیریز کے خلاف پولیس شکایت درج کی تھی جس میں اس نے ہندو خداؤں اور دیویوں کی توہین کرنے کا الزام لگایا تھا اور ممبئی میں کمپنی کے دفتر پر احتجاج کرنے کی دھمکی دی تھی ۔ بی جے پی کے ممبر پارلیمنٹ منوج کوٹک نے ہفتہ کے روز ہندوستان کے اطلاعات و نشریات کے وزیر پرکاش جاوڈیکر کو لکھے گئے ایک خط میں کہا ہے کہ جان بوجھ کر ہندو دیوتاؤں کا مذاق اڑایا ہے اور ہندو مذہبی جذبات کی بے عزتی کی ہے۔

تبصرے