دوستوں کو قتل کرتا تھا پھر انکا گوشت ابال کر کھاتا تھا،آدم خور گرفتار

دوستوں کو قتل کرتا تھا پھر انکا گوشت ابال کر کھاتا تھا،آدم خور گرفتار
دوستوں کو قتل کرتا تھا پھر انکا گوشت ابال کر کھاتا تھا،آدم خور گرفتار

آدم خور جن کے واقعات ہم سنتے آرہے ہیں مگر ایسا کردار شاید ہی ہم نے دیکھا ہو مگر ایک ایسی کہانی اب سامنے آئی ہے جن میں آدم خورکو پولیس نے گرفتار کرلیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق روس میں پولیس نے ایک ایسے شخص کو گرفتار کیا ہے جو اپنے دوستوں کو خود کو قتل کرتا تھا پھر اس کے بعد انکا گوشت بھی کھا لیتا تھا ۔

ایڈورڈ سیلزنیف کو مارچ 2016 سے مارچ 2017کے درمیان گرفتار کیا گیا۔ ایڈورڈ سیلزنیف پر تین دوستوں کا قتل کا الزام تھا۔ ایڈورڈ سیلزنیف نے اپنے بیان میں پولیس کو بتایا ہے کہ اس نے اپنے دوستوں کو خود قتل کیا اور انکا گوشت ابال کر کھا لیا ۔دیئے گئے بیان کے مطابق مجرم نے اعتراف کیا ہے کہ وہ اپنے دوستوں کا گوشت شاپنگ بیگ میں ڈال کر فریج میں رکھ دیا کرتا تھا جبکہ دیگر باقیات سمندر میں بہا دیتا تھا ۔

روسی عدالت نے مجرم کو عمر قید کی سزا سنادی ہے۔

تبصرے