امریکہ سرد جنگ کو ہوا نہ دے،چین نے خبردار کردیا

بشکریہ دنیا نیوز

چین اور امریکہ کورونا وائرس کے شروع ہوتے ہی لفظی گولہ باری کا سلسلہ شروع ہوا جو تاحال جاری ہے

ٹرمپ اور ان کی انتظامیہ مستقل یہ الزام عائد کرتی رہی ہے کہ چین نے گزشتہ سال سامنے آنے والے اس وائرس کو ابتدائی طور پر دنیا سے چھپائے رکھا اور اس کے خلاف بہت دیر سے ردعمل ظاہر کیا جس سے دنیا میں بڑے پیمانے پر تباہی ہوئی۔

دوسری جانب پارلیمانی سیشن کے دوران چین کے وزیر خارجہ کا اپنی پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ہمارے علم میں آیا ہے کہ امریکا میں چند سیاسی قوتیں امریکا اور چین کے تعلقات کو یرغمال بنانے کی کوشش کرتے ہوئے دونوں کو سرد جنگ کی جانب دھکیل رہی ہیں۔

دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات تجارت، انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں اور دیگر مسائل کے سبب پہلے ہی خراب تھے لیکن کورونا وائرس کی وبا کے بعد سے یہ خلیج مزید گہری ہو گئی ہے۔

تبصرے