گاڑی پر تھا مجھے کہا گیا چائنیز وائرس،پھر مارا گیا،یورپ اب ایشیاء کے لوگوں کے لیئے محفوظ نہیں
کورونا وائرس جس کا نام کون نہیں جانتا اس مہلک وائرس نے پوری دنیا کو دیکھتے ہی دیکھتے اپنی لپیٹ میں لے گیا اس وائرس سے جانی و مالی
دونوں نقصان اس دنیا کو اٹھانے پڑے جسکا سلسلہ اب تک جاری ہے اور یہ سلسلہ کب رکے یہ بھی کوئی بنی نوع انسان نہیں جانتا
وائرس کی روک تھام میں پوری دنیا میں لاک ڈاؤن لگایا گیا لوگ گھروں میں بند رہے اب بھی ہیں۔
لاک ڈاؤن کے بعد طویل عرصہ گھروں میں رہنے معاشی حالت ابتر ہونا،ان حالات نے انسانی رویے کئیں اپنی تاریخ میں سمو لیئے
گھروں میں تشدد کے واقعات میں اضافہ،شرح طلاق میں اضافہ،متعدد چیزیں سامنے آئی۔