اتوارکو خواتین یوم واشنگ مشین کیوں مناتی ہیں؟

اتوارکو خواتین یوم واشنگ مشین کیوں مناتی ہیں؟
اتوارکو خواتین یوم واشنگ مشین کیوں مناتی ہیں؟

پورے ہفتے کی مصروفیت کے بعد ایک دن مردوں کو میسر آتا ہے آرام کا۔مگر ہائے کیا کریں اسی دن سبھی کی بیگمات جن کی بیگمات نہیں انکی مائیں اتوا ر کو یوم واشنگ مشین عملی طور پر مناتی نظر آتی ہیں۔ہر چھت پر کپڑے لٹکے نظر آتے ہیں اور یہ لٹکانے والا کام عموما مرد حضرات بیچارے کرتے نظر آرہے ہوتے ہیں۔
مرد بیچارہ اس دن ہزار خواہش لیئے بیٹھا ہوتا ہے کہ اتوار آئے گا وہ دوستوں کے ساتھ جائیگا گپ شپ ہوگی محفل لگے گی گو کہ مرد کی حالت اتوار سے قبل شیخ چلی کی مانند ہوتی ہے کہ بس ہزار منصوبے بنا رکھے ہوتے ہیں مگر یہ سب منصوبے اور آرمان واشنگ مشین میں ہی دھل جاتے ہیں۔پھر بیچارہ مرد اطاعت بیوی حکم بجا لاتے لاتے اپنی ایک دن چھٹی بھی قربان کردیتا ہے اور پھر اس عالم میں اس سے کوئی پوچھ لے کہ دن کیسا رہا؟اس بیچارے کے ہونٹ لٹک،دل میں آرمان،لفظوں میں مایوس شاعری کے سوا کیا ہوتا ہے؟اس عالم میں یہی جملے کچھ یوں ادا ہوتے ہیں
زن مریدکرتا ہوں،مگر خوش رہتا ہوں۔۔!!
اب اس مصرعے کو آپ گلہ سمجھے،شکوہ سمجھے،طنز سمجھے،جانتا ہوں اتنا وقت کہا کہ آپ سمجھے گے لہذا لکھے ہوئے پر ہی اکتفا کریں۔

پیر،منگل،بدھ،جمعرات،جمعہ یا پھر ہفتہ کیوں نہیں؟کیوں اتوار ہی کا دن منتخب ہوتا ہے مشین کے لیئےَ؟ اس کا جواب ایک ماں ہی دے سکتی ہے کیونکہ ماں بھی ایک بیوی ہے۔

مزاح یا سیاسی نوعیت کے کالمز یا بلاگز آپ بھی ہمیں بھیج سکتے ہیں جنہیں اردو ٹرینڈز اپنی ویب سائٹ پر نشر کرے گا۔

تبصرے