تئیس مارچ جب 1940 میں ایک قرار داد منظور کی گئی

تئیس مارچ جب 1940 میں ایک قرار داد منظور کی گئی
تئیس مارچ جب 1940 میں ایک قرار داد منظور کی گئی

ملک پاکستان میں تئیس مارچ کو یوم پاکستان کی مناسبت سے منایا جاتاہے

یہ دن تاریخی لحاظ سے کافی اہمیت کا حامل ہے۔اس دن سن 1940 کو پاکستان مسلم لیگ نے ایک متفقہ طور پر قرار داد منظور کی گئی جسکا متن تھا کہ ایک ایسی الگ ریاست کی بنیاد ڈالنی ہوگی جہاں مسلمان آزادانہ اپنی دینی و معاشرتی زندگی آزادی سے گزار سکیں

آج کی نسل کو اپنی تاریخ پر نظر دوڑا کر یہ دیکھنا چاہیئے اور غور کرنا چاہیے کس طرح ہمارے اسلاف نے محض سات سال قبل ایک قرار داد پیش کی اور پھر اتحاد ایمان اور تنظیم سے اس قرار داد کو عمل جامہ پہنچایا ۔ایک تلخ حقیقت یہ بھی ہے ہماری نئی نسل کو یہ بھی معلوم نہیں کہ اس دن یعنی تئیس مارچ کو کیا ہوا تھا ؟
اردو ٹرینڈز نے اس ضمن میں ایک وڈیو بھی بنائی جو آپ اردو ٹرینڈز کے یوٹیوب اور فیس بک پیج پر تئیس مارچ کی مناسبت سے بنی اس وڈیو کو دیکھ بھی سکتے ہیں جس میں لوگوں سے پوچھا گیا ہے کہ تئیس مارچ کو کیا ہوا تھا؟

اکثریت لوگوں کی ایسی تھی جو اس تاریخی دن کی تاریخ اور اس کے پس منظر سے مکمل طور پر نا بلد نظر آتی ہے

قیام پاکستان کا مقصد کیا تھا؟

یہ سوال اہم ترین ہے ملک پاکستان کی مناسبت سے جب بھی ایسے دن آتے ہیں تو ایسے دن تجدید عہد کے لیئے ہوتے ہیں مگر یہاں معاملہ الٹا ہے۔رسمی بیانات جاری کردیئے جاتے ہیں اور ایک پریڈ کا انعقاد کر کے فریضہ ادا کردیا جاتا ہے اور پھر بس۔۔

قیام پاکستان کا مقصد جسے قائد اعظم نے بتادیا اصول کیا ہونگے وہ بتادیئے اور ایسا ہر گز نہیں کہ قائد اعظم محمد علی جناح نے وہ اصول خود سے بتائیں ہوں بلکہ یہ واضح کہا اصول وہی ہیں جو قرآن مجید میں درج ہیں کچھ نیا ہم نے نہیں بنانا بلکہ وہی اصول ہیں جو کلام اللہ میں اللہ نے بتادیئے اور انہیں ہم نے اپنانا ہے

کیا ان اصولوں پر عمل ہورہا ہے؟آج بھی آپ اپنے نظام میں نظر دوڑائیں وہ قوانین اب بھی موجود ہیں جو برطانیہ کے بنے ہوئے ہیں آج تک ہمارے سیاستدان ان قوانین کا خاتمہ نہ کر سکے دوسری جانب انصاف کا ادارہ دیکھ لیں ایک بار کسی کا معاملہ عدالت میں چلا جائے تو پھر نہ جانے اسکی کتنی نسلیں عدالتوں کے چکر لگاتی رہیں گی کس کس نظام یا ادارے کا رونا رویا جائے ایک عرصہ ہوگیا اس ملک کے وجود کو مگر پریشانیاں و مسائل ہیں کہ اب بھی اصلاحات کے منتظر ہیں

تبصرے