مصری فٹبالر محنت مزدوری پر مجبور ہوگیا

فوٹوــــــاے پی

کورونا وائرس کی وجہ لاک ڈاؤن کے باعث مصری فٹ باؤلر محنت مزدوری کرنےپر مجبور ہوگیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پوری دنیا کی طرح مصر میں بھی کورونا وائرس کے باعث لاک ڈاؤن ہے جسکی وجہ سے متعدد افراد بے روزگار ہوئے ہیں وہیں مصر کے ایک فٹبالر بھی مالی طور پر متاثر ہوئے ہیں۔

فٹبالر محمود ہر ماہ فٹبال کھیل کے 200 ڈالر کماتے تھے جس سے وہ اپنے گھر کے اخراجات پورے کرتے تھے۔

محمود اپنے گھر میں سب سے بڑے بھائی ہیں جن کے والد ریٹائرڈ ہوچکے ہیں اور دل کے مرض میں بھی مبتلا ہیں تاہم والد سمیت والدہ اور چھوٹے بھائی کی ذمہ داری محمود ہی نبھارہا ہے۔

اس وقت فٹبالر محمود مصر کے شہر منفلوط میں ہیں جہاں انہوں نے سب سے پہلے مزدوری کی جس سےوہ روزانہ 7 ڈالر کماتے ہیں

تبصرے